ساہیوال ٹیچنگ ہسپتال میں بریسٹ کینسر آگہی واک اور سیمینار

خواتین اس بیماری کی علامات ظاہر ہوتے ہی ڈاکٹر سے رجوع کریں

پرنسپل ساہیوال میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر محمد عمران حسن خان نے کہا ہے کہ بریسٹ کینسر خواتین میں اموات کی ایک بڑی وجہ ہے جس کے بروقت علاج سے اسے نہ صرف پھیلنے سے روکا جا سکتا ہے بلکہ مکمل صحت یابی بھی ممکن ہے۔

ضرورت اس امر کی ہے کہ خواتین اس بیماری کی علامات ظاہر ہوتے ہی ڈاکٹر سے رجوع کریں اور مرض چھپانے کی بجائے اس کا علاج کروائیں۔

انہوں نے یہ بات ساہیوال ٹیچنگ ہسپتال میں سرجیکل وارڈ 3 کے زیر اہتمام بریسٹ کینسر آگہی واک کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

آگاہی واک میں میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر اختر محبوب، ڈاکٹر نثار احمد سعیدی، ڈاکٹر ہارون گیلانی، ڈاکٹرمحمد سلیم، ڈاکٹرساجد مصطفی، ڈاکٹرشاہد علی اور ڈاکٹرفرخ شہزاد سمیت فکیلٹی ممبران اور پیرامیڈیکل سٹاف نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں بریسٹ کینسر سے بچاؤ ایک چیلنج ہے جس سے نمٹنے کا واحد ذریعہ خواتین میں اس بیماری سے متعلق آگہی اور شعور کا ہونا ہے۔

میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر اختر محبوب نے بتایا کہ ساہیوال ٹیچنگ ہسپتال میں بریسٹ کینسر سکریننگ کی سہولت موجود ہے جہاں خواتین کو خود تشخیصی کی تربیت بھی فراہم کی جاتی ہے۔

واک کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے میڈیکل وارڈ 3 کے سربراہ ڈاکٹر زاہد ستار نے خواتین پر زور دیا کہ وہ بریسٹ کینسر کی علامات ظاہر ہونے کی صورت میں فوراً ڈاکٹر سے مشورہ کریں کیونکہ ابتدائی مرحلے میں اس خطرناک بیماری کا علاج ممکن ہے۔ واک کے شرکاء نے بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر بریسٹ کینسر سے متعلق آگہی دی گئی تھی۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.